تازہ ترین

قومی کرکٹ ٹیم کے کوچ مکی آرتھر کی میڈیا سے گفتگو

لاہور۔8 فروری(اے پی پی )قومی کرکٹ ٹیم کے ہیڈ کوچ مکی آرتھر نے کہا ہے کہ جنوبی افریقہ میں کوئی ساﺅتھ ایشین ٹیم ٹیسٹ سریز نہیں جیت سکی،جنوبی افریقہ میں ٹیم کے کھلاڑیوں کا جذبہ قابل تحسین تھا، ٹی ٹونٹی اور ون ڈے کرکٹ میں کھلاڑیوںنے جنوبی افریقہ کا مقابلہ کیا مگر بدقسمتی سے سریز ہار گئے۔ قذافی سٹیڈیم لاہور میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے مکی آرتھر نے کہا کہ ٹیسٹ ٹیم میں صرف تین کھلاڑی ایسے تھے جو کہ پہلے ساﺅتھ افریقہ کا دورہ کرچکے تھے ،ساﺅتھ افریقن ٹیم کو بھی بہترین پرفارمنس پر کریڈٹ دیتا ہوں ، مایوسی ہوئی کہ پاکستان ایک روزہ سریز نہیں جیت سکا، جنوبی افریقہ میں ناکامیوں سے قطع نظر ایک اچھی بات ہے کہ نوجوان کرکٹرز کی کارکردگی میں نکھار آیا، ون ڈے میں بھی کارکردگی بہتر ہوئی،ساﺅتھ افریقہ کا دورہ ہر ایشین ٹیم کے لئے مشکل ہوتا ہے ،ہمارے کھلاڑیوں نے ساﺅتھ افریقہ کی خطرناک بولنگ لائن کے خلاف اچھی پرفارمنس دی ،قومی ٹیم نے جنوبی افریقہ کے دورہ سے بہت کچھ سیکھا جو کہ مستقبل میں کام آئے گا ، کھلاڑی ورلڈ کپ کے لئے تیار ہیں۔انہوں نے ایک سوال کے جواب میں بتایا کہ سرفراز احمد کو کپتان مقرر کرنے کے معاملے میں کسی کے ذہن میں کوئی ابہام نہیں تھا،قومی ٹیم کے ہیڈ کوچ مکی آرتھر نے کہا کہ سرفراز احمد کی اصل ذمہ داری وکٹ کیپنگ ہے، انھوں نے گذشتہ چار ماہ میں صرف 8 گیندیں ڈراپ کی ہیں، انہیں خود بھی معلوم ہے کہ بیٹنگ فارم آتی اور جاتی رہتی ہے،وہ کسی بھی نمبر پر اچھا کھیلیں ٹیم کی جیت کا راستہ بنتا ہے، سخت محنت کر رہے ہیں، بیٹ سے بھی عمدہ پرفارم کریں گے، مجھے ان کی فارم پر کوئی تشویش نہیں۔

تبصرہ کریں

آپ کی ایمیل یا ویبشایع نہیں کی جائے گی. لازمی پر کریں *

*